نتائج العلامات : پاک فوج

میانوالی فضائی اڈے پر حملہ آور 9 دہشت گرد مار دیئے ،پاک فوج

واضح رہے کہ یہ گذشتہ دو دنوں کے دوران ملک کے تین صوبوں میں فوجی اہلکاروں اور فوجی تنصیات کونشانہ بنائے جانے کا تیسرا بڑا واقعہ ہے جب گذشتہ رات کو بلوچستان کے  ساحلی شہر گوادر میں فوجی قافلے کی گاڑیوں پر ہونے والے حملے میں 14 اہلکار شہید ہوگئے تھے ،دہشت گردی کا یہ واقعہ پسنی کے قریب کوسٹل ہائی وے پر پیش آیا جب فوجی اہلکاروں کا ایک قافلہ پسنی سے اورماڑہ جارہا تھا ،

تیراہ کا امن مارچ اورقبائلی اضلاع میں امن کی ادھوری خواہش

باڑہ میں لشکر اسلام، امر بالمعروف اور تحریک طالبان اور تیراہ میدان میں انصار الاسلام اور طالبان جیسی تنظیموں کی موجودگی،دہشتگردی اور ان مسلح تنظیموں کی آپس میں لڑائیوں اور جھگڑوں کی وجہ سے بدامنی ہر سوں پھیلی تھی، کاروبار زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا تھا ہر طرف ان مسلح تنظیموں کا سکہ چلتا تھا اور ان میں سے ہر ایک نے اپنی شریعت نافذ کردی تھی

9 مئی پاکستان کیخلاف منظم سازش تھی ،پاک فوج کے 3 اعلیٰ افسران برطرف

نیوز ڈیسک پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل احمد شریف نے کہا ہے...

ڈاکٹرائن کی ناکامی سے مایوس نہ ہوں‌،تجربات جاری رکھیں‌

کمانڈ سٹک ڈنڈا پکڑائی کی تقریب میں اور تو سب موجود تھے بجز اس کے جس میں وہ ڈنڈا ہے ۔ اس بے...

جنرل عاصم منیر نئے سپہ سالار اور جنرل باجوہ کیخلاف غیض و غضب کی لہر

آزادی ڈیسک مجھے اپنی فوج پر فخر ہے جو محدود وسائل کے باوجود سیاچن کے برفپوشوں سے تھرکے ریگزاروں تک مادروطن کا...

الأكثر شهرة

ماحولیاتی آلودگی کے برے اثرات!!

کدھر ہیں ماحولیاتی آلودگی اور انڈسٹریز اینڈ کنزیومرز کے محکمے جو یہ سب کچھ دیکھتے ہوئے بھی خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں آبادی بیشک تیزی سے بڑھ رہی ہے اور اپنا گھر ہر کسی کی خواہش اور ضرورت ہے رہائشی منصوبوں کی مخالفت نہیں کرتا اور ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر کو ضروری سمجھتا ہوں تاہم ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر اور اس سے جڑے ہوئے ضروری لوازمات اور معیار پر سمجھوتہ نہیں ہونا چاہئے اور باقاعدگی سے ان ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر کے وقت نگرانی کی جانی چاہئے

متبادل پر سوچیں!! سدھیر احمد آفریدی کی تحریر

یہ بلکل سچی بات ہے کہ کوئی بھی مشکل...

بیوٹی پارلر میں کام کرنیوالی لڑکی جس کی پرورش خالہ نے کی اور زندگی بھائی لے لی

ذرائع کے مطابق مقتولہ کو بچپن میں اس کی خالہ نے گود لے لیا تھا اور بالغ ہونے تک وہ اپنی خالہ کے پاس رہتی تھی پھر وہ ایک ڈاکٹر کے ساتھ بطور نرس کام کرتی رہی اس دوران وہ بیرون ملک چلی گئی جہاں سے دو ہفتے قبل واپس آئی اور اپنے منہ بولے ماموں غلام مصطفیٰ ولد روشن خان سکنہ سجی کوٹ روڈ قلندرآباد کی وساطت سے گوجری چوک میں فلیٹ کرائے پر لے کر رہنے لگی ۔

فاٹا انضمام کے معاملے پر مشران کی سپریم کورٹ سے مداخلت کی اپیل

ضلع خیبر سے جبران شنواری بالجبر انضمام اور پولیس نظام...
spot_img