دیگر پوسٹس

تازہ ترین

ماحولیاتی آلودگی کے برے اثرات!!

کدھر ہیں ماحولیاتی آلودگی اور انڈسٹریز اینڈ کنزیومرز کے محکمے جو یہ سب کچھ دیکھتے ہوئے بھی خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں آبادی بیشک تیزی سے بڑھ رہی ہے اور اپنا گھر ہر کسی کی خواہش اور ضرورت ہے رہائشی منصوبوں کی مخالفت نہیں کرتا اور ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر کو ضروری سمجھتا ہوں تاہم ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر اور اس سے جڑے ہوئے ضروری لوازمات اور معیار پر سمجھوتہ نہیں ہونا چاہئے اور باقاعدگی سے ان ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر کے وقت نگرانی کی جانی چاہئے

متبادل پر سوچیں!! سدھیر احمد آفریدی کی تحریر

یہ بلکل سچی بات ہے کہ کوئی بھی مشکل...

بیوٹی پارلر میں کام کرنیوالی لڑکی جس کی پرورش خالہ نے کی اور زندگی بھائی لے لی

ذرائع کے مطابق مقتولہ کو بچپن میں اس کی خالہ نے گود لے لیا تھا اور بالغ ہونے تک وہ اپنی خالہ کے پاس رہتی تھی پھر وہ ایک ڈاکٹر کے ساتھ بطور نرس کام کرتی رہی اس دوران وہ بیرون ملک چلی گئی جہاں سے دو ہفتے قبل واپس آئی اور اپنے منہ بولے ماموں غلام مصطفیٰ ولد روشن خان سکنہ سجی کوٹ روڈ قلندرآباد کی وساطت سے گوجری چوک میں فلیٹ کرائے پر لے کر رہنے لگی ۔

فاٹا انضمام کے معاملے پر مشران کی سپریم کورٹ سے مداخلت کی اپیل

ضلع خیبر سے جبران شنواری بالجبر انضمام اور پولیس نظام...

ٹورڈی خنجراب سائیکل ریس میں افغان خواتین سائیکلسٹ بھی حصہ لیں گی

بیورورپورٹ
پشاور

تیسری ٹور ڈی خنجراب سائیکل ریس میں افغانستان کی مرد و خواتین سائیکلسٹ بھی حصہ لینگی. پاکستان سائیکلنگ فیڈریشن کے اظہر علی شاہ کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ کے مطابق تیسری ٹور ڈی خنجریب انٹرنیشنل سائیکل ریس کی تاریخوں کو تبدیل کردیا گیا ہے۔

اب اس ریس کا انعقاد 12 سے 16 جولائی 2021 کو ہوگا۔انہوں نے بتایا کہ افغانستان کی خواتین اور مرد ٹیموں کے تیسرے ٹور ڈی خنجراب ریس میں حصہ لینے کی تصدیق ہوگئی ہے

انہوں نے مزید بتایا کہ 8 جولائی 2021 کو تمام ٹیمیں اسلام آباد پہنچیں گی، ٹیموں کو شاہراہ ریشم کے ذریعے گلگت روانہ کیا جائے گا۔

اظہر علی شاہ کے مطابق قازقستان، ازبکستان، سعودیہ اور یو اے ای کی ٹیموں کو اس حوالے سے خط بھیجے جا چکے ہیں اورگلگت اور دیگر تمام مقامات پر ضروری انتظامات جاری ہیں۔


یہ بھی پڑھیں

  1. ٹیبل ٹینس مردوخواتین کھلاڑیوں کیلئے مخلوط تربیت پر پابندی
  2. انٹرنیٹ کی خرابی دنیا کی بڑی ویب سائیٹس منظرسے غائب
  3. پشاورمیں طویل تعطل کے بعد کھیل کی سرگرمیوں کا خوشگوارآغاز
  4. ”کھیلوآزادی سے“کشمیر پریمیر لیگ کا نیا ترانہ جاری

پاکستان کا امیج بہتر ہوگا ،اظہرشاہ

اظہر علی شاہ کے مطابق ریس پاکستان کے سب سے بڑی کھیلوں میں شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس ریس سے نہ صرف پاکستان کی سافٹ امیج اور سپورٹس سے محبت کرنے والے  ملک کی حیثیت سے تشخص اجاگر ہوگا

بلکہ ہمارے شمالی علاقوں کی سیاحت کو بھی فروغ ملے گا۔ اظہر شاہ نے مزید بتایا کہ پاکستان سائیکلنگ فیڈریشن کے رجسٹرڈ اور اس کے ساتھ اوپن مرد اور خواتیں سائیکلسٹ بھی ریس میں حصہ لے سکتے ہیں

اور ان کی اس دوڑ میں حصہ لینے کا تہہ دل سے خیرمقدم کرے گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی سی ایف خواتین سائیکلسٹ کو مساوی موقع دینے میں یقین رکھتی ہے، اور اس بار ریس سے منسلک تمام ٹیموں کی خواتین ٹیمیں بھی حصہ لے رہی ہیں۔