دیگر پوسٹس

تازہ ترین

ماحولیاتی آلودگی کے برے اثرات!!

کدھر ہیں ماحولیاتی آلودگی اور انڈسٹریز اینڈ کنزیومرز کے محکمے جو یہ سب کچھ دیکھتے ہوئے بھی خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں آبادی بیشک تیزی سے بڑھ رہی ہے اور اپنا گھر ہر کسی کی خواہش اور ضرورت ہے رہائشی منصوبوں کی مخالفت نہیں کرتا اور ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر کو ضروری سمجھتا ہوں تاہم ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر اور اس سے جڑے ہوئے ضروری لوازمات اور معیار پر سمجھوتہ نہیں ہونا چاہئے اور باقاعدگی سے ان ہائی رائزنگ عمارتوں کی تعمیر کے وقت نگرانی کی جانی چاہئے

متبادل پر سوچیں!! سدھیر احمد آفریدی کی تحریر

یہ بلکل سچی بات ہے کہ کوئی بھی مشکل...

بیوٹی پارلر میں کام کرنیوالی لڑکی جس کی پرورش خالہ نے کی اور زندگی بھائی لے لی

ذرائع کے مطابق مقتولہ کو بچپن میں اس کی خالہ نے گود لے لیا تھا اور بالغ ہونے تک وہ اپنی خالہ کے پاس رہتی تھی پھر وہ ایک ڈاکٹر کے ساتھ بطور نرس کام کرتی رہی اس دوران وہ بیرون ملک چلی گئی جہاں سے دو ہفتے قبل واپس آئی اور اپنے منہ بولے ماموں غلام مصطفیٰ ولد روشن خان سکنہ سجی کوٹ روڈ قلندرآباد کی وساطت سے گوجری چوک میں فلیٹ کرائے پر لے کر رہنے لگی ۔

فاٹا انضمام کے معاملے پر مشران کی سپریم کورٹ سے مداخلت کی اپیل

ضلع خیبر سے جبران شنواری بالجبر انضمام اور پولیس نظام...

طالبان کی آمد کے بعد کابل ایئر پورٹ پر پہلا خودکش حملہ،امریکی خدشات درست نکلے

آزادی ڈیسک


15 اگست کو کابل میں طالبان کے پرامن داخلے کے 11ویں روز دہشت گردی کا پہلا واقعہ ،ملک سے نکلنے کے خواہاں ہزاروں شہریوں کے درمیان میں ابتدائی اطلاعات کے مطابق خودکش دھماکہ ہوا ہے ،جبکہ بعض اطلاعات کے مطابق دو دھماکوں اور فائرنگ کی آوازسنائی دی گئی ہے

واضح رہے کہ دو روز قبل امریکہ اور دیگر یورپی ممالک نے داعش کی جانب سے کسی ممکنہ حملے کے خطرے کے پیش نظر اپنے شہریوں کو ایئر پورٹ کی جانب آنے سے منع کردیا تھا ،

جبکہ دو روز قبل ہی طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے اپنی دوسری پریس کانفرنس میں افغان شہریوں کے ایئرپورٹ کی جانب جانے پر پابندی کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ صرف غیرملکی لوگوں کو ایئر پورٹ کی طرف جانے کی اجازت ہوگی


یہ بھی پڑھیں


لیکن اس کے باوجود 11 ویں روز بھی ملک سے نکلنے کے خواہاں ہزاروں مردو خواتین اور بچے انتہائی کسمپرسی کی حالت میں ایئر پورٹ کے باہر موجودتھے ۔اور لوگوں کو وہاں سے ہٹانے کی تمام تر کوششیں ناکام ثابت ہوئیں

ابتدائی اطلاعات کے مطابق اب سے تھوڑی دیر قبل ہونے دودھماکوں کے نتیجے میں متعددطالبان سیکورٹی گارڈ اور تین امریکی فوجیوں کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں ،جبکہ ابتدائی طورپر جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 10 بتائی جارہی ہے جن میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں ،البتہ انسانی ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے

دوسری جانب زخمیوں کو کابل کے مختلف ہسپتالوں میں منتقل کیئے جانے کا سلسلہ بھی جاری ہے
دھماکے کابل ایئرپورٹ کے شمالی دروازے پر ہوئے